باپ کی سالی سے نکاح F10-20-01 - احکام ومسائل

تازہ ترین

Saturday, February 8, 2020

باپ کی سالی سے نکاح F10-20-01


باپ کی سالی سے نکاح

O کیا باپ کی سالی سے نکاح کرنا جائز ہے؟ کتاب و سنت کی روشنی میں ہماری رہنمائی کریں۔
P باپ کی سالی دو طرح کی ہوتی ہے،ایک صورت میں نکاح حرام ہے جبکہ دوسری صورت میں سالی سے نکاح جائز ہے، اس کی تفصیل حسب ذیل ہے:
1       اگر باپ کی سالی برخوردار کی حقیقی خالہ ہے تو اس صورت میں باپ کی سالی سے نکاح نہیں ہوسکتا۔ ارشاد باری تعالیٰ ہے:
’’اور تمہاری خالائیں حرام کردی گئی ہیں۔‘‘ (النساء:۲۳)
2       اگر باپ نے دوسری شادی کی ہے تو اس صورت میں باپ کی سالی پہلی بیوی کی اولاد کے لئے حقیقی خالہ نہیں ہے،اس صورت میں پہلی بیوی کا کوئی بھی لڑکا اپنے باپ کی منکوحہ کی بہن یعنی اس کی سالی سے شادی کرسکتا ہے، کیونکہ وہ حقیقی خالہ نہیں ہے۔ ارشاد باری تعالیٰ ہے:
’’ان عورتوں کے علاوہ دوسری عورتیں تمہارے لئے حلال کردی گئی ہیں۔‘‘(النساء:۲۴)
مذکورہ سوال کے تناظر میں ہم اپنے قارئین سے گذارش کریں گے کہ وہ سوالات کو معمہ کی شکل دینے سے اجتناب کیا کریں کیونکہ اس میں وقت کا ضیاع ہوتا ہے۔

No comments:

Post a Comment

Pages