نماز میں ایک ہی سورت کی تکرار F10-18-02 - احکام ومسائل

تازہ ترین

Saturday, February 8, 2020

نماز میں ایک ہی سورت کی تکرار F10-18-02


نماز میں ایک ہی سورت کی تکرار

O کیا کسی نماز کی دو رکعات میں ایک ہی سورت کی تلاوت کرنا جائز ہے؟ اگر کوئی امام ایسا کرتا ہے تو کیا ایسا کرنے سے نماز ہو جاتی ہے؟
P کبھی کبھار ایسا کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے‘ اسے بطور عادت اختیار کرنا صحیح نہیں ہے۔ رسول اللہe سے زندگی میں صرف ایک مرتبہ ایسا کرنا ثابت ہے، چنانچہ سیدنا معاذ بن عبداللہ جہنیt بیان کرتے ہیں کہ ایک آدمی نے انہیں بتایا، اس نے رسول اللہe کو سنا کہ آپﷺ نے صبح کی دو رکعت میں سورۃ ’’اذا زلزلت‘‘ تلاوت فرمائی، راوی بیان کرتا ہے کہ مجھے معلوم نہیں کہ رسول اللہe نے بھول کر ایسا کیا یا دانستہ طور پر آپ نے اس سورت کی قراءت فرمائی۔  (ابوداؤد، الصلوٰۃ: ۸۱۶)
امام ابوداؤد نے اس حدیث پر بایں الفاظ عنوان قائم کیا ہے: ’’ایک ہی سورت کو دو رکعت میں تلاوت کرنا۔‘‘
صاحب مرعاۃ نے حافظ ابن حجر ؒکے حوالہ سے لکھا ہے:
’’ظاہر یہی ہے کہ رسول اللہe نے دانستہ طور پر ایسا کیا تا کہ اس سنت کیلئے جواز مہیا ہو۔‘‘ (مرعاۃ المفاتیح ص ۱۷۷ ج ۳)
امام بخاریؒ نے سیدنا قتادہؓ کے حوالے سے لکھا ہے کہ ان سے ایک ایسے آدمی کے متعلق سوال ہوا جو ایک ہی سورت کو دو رکعت میں تقسیم کر کے پڑھتا ہے یا ایک سورت کو دو رکعت میں بار بار پڑھتا ہے تو انہوں نے جواب دیا ہے کہ جائز ہے کیونکہ سب اللہ کی کتاب ہے۔ (صحیح بخاری، باب نمبر ۱۰۶)
حافظ ابن حجرؒ نے شارح بخاری ابن منیر کے حوالہ سے لکھا ہے کہسورت کو تقسیم کر کے پڑھنے سے بہتر ہے کہ دو رکعت میں بار بار ایک ہی سورت کو پڑھ دیا جائے۔ (فتح الباری ص ۳۳۳ ج ۲)

No comments:

Post a Comment

Pages